اب بھی توہین اطاعت نہیں ہو گی ہم سے

Published on by KHAWAJA UMER FAROOQ


اب بھی توہین اطاعت نہیں ہو گی ہم سے
دل نہیں ہو گا تو بیعت نہیں ہو گی ہم سے

روز اک تازہ قصیدہ نئی تشہیب کے ساتھ
رزق برحق ہے یہ خدمت نہیں ہو گی ہم سے ...


دل کے معبود جبینوں کے خداؤں سے الگ
ایسے عالم میں عبادت نہیں ہو گی ہم سے

اجرت عشق وفا ہے تو ہم ایسے مزدور
کچھ بھی کر لیں گے یہ محنت نہیں ہو گی ہم سے

ہر نئی نسل کو اک تازہ مدینے کی تلاش
صاحبو!اب کوئی ہجرت نہیں ہو گی ہم سے

سخن آرائی کی صورت تو نکل سکتی ہے
پر یہ چکی کی مشقت نہیں ہو گی ہم سے

Enhanced by Zemanta

Published on Islam, Mixtape, Allah, Rumi, Muslim, Urdu, ghazal, Poetry

Comment on this post